اتائی ڈاکٹروں کے خلاف شکایات کیلئے مفت موبائل ایپلی کیشن متعارف

سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن کےچیئرمین پروفیسر ٹیپو سلطان نے کہا ہے کہ پاکستان میں پہلی بار ایک مفت موبائل ایپلی کیشن متعارف کرادی گئی ہے جس سے عوام اتائی ڈاکٹروں کے خلاف شکایات درج کراسکیں گے ۔ وہ جمعے کو کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے ۔ اس موقع پر ان کے ہمراہ کمیشن کے سی ای او ڈاکٹر منہاج قدوائی ،ڈائریکٹر ڈاکٹر سلیمان اوڈھو، پاکستان ڈینٹل ایسوسی ایشن کے صدر محمود شاہ اور پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے رہنما ڈاکٹر مرزا علی اظہربھی موجو د تھے ۔ پروفیسر ٹیپو سلطان نے کہا کہ سندھ ہیلتھ کیئرکمیشن ایک خودمختار ریگولیٹری اتھارٹی ہے جس کا مقصد صوبہ سندھ میں معیاری صحت کی سہولیات کی فراہمی اوراتائیت کا خاتمہ ہے اور اس مسئلے کو عام آدمی کی ذہنی سطح تک پہنچانا ہے ہم نے اتائیت جیسی برائی سے لڑنے کے لیے اتھینٹک کے نام سے ایک موبائل ایپلی کیشن متعارف کرادی ہے ۔ جس کی بدولت صوبہ سندھ میں اتائیت کے خلاف مہم آگے بڑھانے میں مددملے گی جو سندھ ہیلتھ کیئر کمیشن

کی اہم ترجیح ہے۔انہوں نے بتایاکہ عوام موبائل ایپلی کیشن پر پی ایم ڈی سی نمبر ڈالیں گے جس سے ڈاکٹر کے مستند یا اتائی ہونے کا پتہ چل جائے گا۔ ڈاکٹر منہاج قدوائی نے کہاکہ کمیشن کے قیام کا مقصد صحت کی فراہمی کے معیار کو بہتر بنانا ہے نیز صحت کی فراہمی کے لیے قائم کی گئی تمام سہولیات کو رجسٹرڈ کرنا ہے لائسنس کا اجراء ، صحت کی سہولیات کے انتظامات کی نگرانی، صحت کی فراہمی سے متعلق شکایات کا ازالہ اور صوبہ میں اتائیت پر مکمل پابندی ہمارے چیدہ چیدہ مقاصد ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اب تک ساڑھے تین ہزار صحت کے مراکزو کلینکس کو رجسٹرڈ کر چکے ہیں جبکہ 17شکایات موصول ہو چکی ہیں ،رجسٹرڈہسپتالوں کے معیار پر تربیتی پروگرام شروع کیا جاچکا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں